mashrabenaab
سیریز
مشرب ناب متاع انسانیت
شناخت قرآن
نھج البلاغہ - علی کی دنیا
امام خمینی کی نظریاتی بنیادیں
اسلامی مرکز - قم
عالم اسلام میں سعودی ارب کا کردار
سننِ الٰہی در قرآن
اسرارِخودی
حکمت علی ؑ
Question & Answer
 
صلی صفحہ > سیریز > شناخت قرآن
  Rabi-ul-Awwal Rabi-us-Saani 1431 (09)
 

قرآن مجید کلامِ خدا وند تبارک وتعالیٰ ہے اور اسے خدا وند تبارک وتعالیٰ نے رسول اکرم ۖ کے قلب نورانی پر نازل فرمایا۔ نزول قرآن سے مراد یہ ہے کہ اسے لفظی قالب میں پیش کر کے انسانی سطح پر لایا گیا ہے تاکہ انسان کے لئے قابل فہم ہوجائے پس قرآن کا مخاطب انسان ہے یعنی جو کچھ بھی قرآن کے اندر موجود ہے وہ سب انسان کے لئے ہے اور غیرِ انسان کے لئے قرآن کے اندر کوئی پیغام موجود نہیں ہے ۔ لہٰذا قرآن مجیدمبداء کے لحاظ سے آسمانی اور الٰہی کتاب ہے اور لانے والے کے لحاظ سے یہ کتابِ رسول اﷲ ۖ ہے ۔

  مزید پڑھیئے >>
 

  Muharram - Safar - 1431 (08)
 

قرآن مجید کلام خدا ہے اور اسے خدا وند متعال نے عربی الفاظ کا لباس پہنا کر نازل کیا تاکہ انسان کے لئے قابل ً کا مخاطب نہ کوئی خاص قوم ہے، نہ کوئی خاص امت اور نہ ہی کوئی خاص زمانہ بلکہ تمام بشریت قرآن مجید کی مخاطب ہے اور تمام انسانوں کو قرآن نے مورد خطاب قرار دیا ہے

  مزید پڑھیئے >>
 

  Ziqad - Zilhajj - 1430 A.H (07)
 

شناخت قرآن کی بحث میں گزشتہ شمارے میں یہ ذکر ہوا تھا کہ قرآن مجید خداوند تبارک وتعالیٰ کا کلام ہے لیکن اس وقت ہما رے پاس یہ کلام اپنے نزول کے بعد والی شکل میں موجود ہے۔ خداوندتبارک وتعالیٰ نے اسے عالم الٰہ وعالم ربوبی سے زمین پر نازل

  مزید پڑھیئے >>
 

  Ramzan -Shawwal - 1430 A.H (06)
 

شناخت قرآن کی بحث میں مطلب اول یہ ہے کہ قرآن مجید خدا وند تبارک وتعالیٰ کا کلام ہے۔ قرآن کے کلام الٰہی ہونے پر انسان کا اعتقاد و ایمان ہونا چاہئے اور انسان کے عمل سے بھی یہی ظاہر ہونا چاہئے کہ یہ کلامِ خدا ہے۔

  مزید پڑھیئے >>
 

  Rajab Shabaan - 1430 A.H (05)
 

قرآن کریم سے ہدایت حاصل کرنے کے لئے کلام الہٰی کی بنیادی معرفت اور شناخت کی اشد ضرورت ہے جس میں سے پہلا نکتہ یہ ہے کہ قرآن کے کلام خدا ہونے کی حقیقت کو درک کیا جائے

  مزید پڑھیئے >>
 

  Jamadi-ul-Ala-Jamadi-usu-Saani - 1430 (04)
 

شناخت قرآن کریم میں دوسرااہم نکتہ یہ ہے کہ جب انسان یقین کر لے کہ یہ کلام خدا ہے میرے ربّ اور خالق و مالک کا کلام ہے تو قرآن کریم کی نسبت اس کا زاویہ نگاہ بھی صحیح ہو جاتا ہے کیونکہ اگر زاویہ دید درست نہ ہو اور قرآن کی طرف رجوع کیا جائے تو ا س کا نتیجہ وہی ہوگا جو رجوع نہ کرنے کا ہے

  مزید پڑھیئے >>
 

  Rabi-ul-Awal to Rabi-ul-Sani (03)
 

قرآن کا پےغام سمجھنا اےک معرفت ہے اور دوسری معرفت خود قرآن کو سمجھنا ہے ےعنی قرآن کا تعارف بھی قرآن کی شناخت ہے ۔ کتاب خدا کے پےغام کو سمجھنے کے لےے اس کے تعارف کی ضرورت ہے۔ قرآن کرےم کی مہجورےت کی بڑی وجہ اس کا تعارف نہ ہونا ےا درست تعارف نہ ہونا ہے ۔

  مزید پڑھیئے >>
 

  Mohurrum Safar (02)
 

شناخت قرآن

  مزید پڑھیئے >>
 

 
Recent DVD Release